کیا سیدنا معاویہ بن ابی سفیان رضی اللہ تعالیٰ عنہما کا کاتبِ وحی ہونا ثابت ہے؟

 از    August 16, 2014

سوال:  کیا سیدنا معاویہ بن ابی سفیان رضی اللہ تعالیٰ عنہما کا کاتبِ وحی ہونا ثابت ہے ؟  صحیح حدیث سے جواب دیں۔
(فضل اکبر کاشمیری)
الجواب:  امام بیہقی ؒ فرماتے ہیں کہ:
“أخبرناہ أبو عبداللہ الحافظ: حدثنا علي بن حمشاد : حدثنا ھشام بن علي: حدثنا موسی بن إسماعیل: حدثنا أبو عوانۃعن أبی حمزۃ قال: سمعت ابن عباسؓ قال: کنت ألعب مع الغلمان فإذا رسول اللہ ﷺ قد جاء فقلت: ماجاء إلا إلي فاختبات علی باب فجاء فحطأ ني حطأۃ قال: اذھب فادع لي معاویۃ، وکان یکتب الوحی” إلخ (دلائل النبوۃ ج۶ ص ۲۴۳)

اس حدیث کی سند صحیح ہے۔ ابوحمزہ القصاب عمران بن ابی عطاء الاسدی صحیح مسلم کے راوی اور جمہور محدثین کے نزدیک ثقہ و صدوق ہیں۔ (دیکھئے  کتاب نور العینین طبع جدید ص ۱۴۸)

اس روایت “وکان یکتب الوحي اور آپ (سیدنا معاویہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ) وحی لکھتے تھے، سے امیر معاویہ ؓکا کاتبِ وحی ہونا ثابت ہے ۔ والحمد للہ

تنبیہ: ابوحمزہ عن ابن عباس والی یہ روایت مختصراً صحیح مسلم (۲۶۰۴ و ترقیم دارالسلام:۶۶۲۸) میں بھی موجود ہے۔
(۵ شعبان ۱۴۲۶؁ھ)

نئے مضامین بذریعہ ای میل حاصل کیجیے

تمام مضامین

About Tohed.com

Tohed.com is an Urdu Islamic Website, aiming to preach true Islamic Information based on Qur'an and Sunnah. Here you can find out hundreds of urdu articles by reputed scholars. It's a completely non-commercial project with an objective to propagate Information about Islam in native language for the sub-continent readers.