حدیث کلّ أیّام التّشریق ضعیف ہے

 از    July 4, 2015

سوال:  حدیث کلّ أیّام التّشریق ذبح بلحاظِ سند کیسی ہے؟

جواب:            یہ حدیث جمیع سندوں کے ساتھ ” ضعیف ” ہے۔

    اس کو ابو نصر التمار عبد الملک بن عبد العزیز القشیری نے سید بن  عبد العزیز عن سلیمان بن موسیٰ  عن عبد الرّ حمٰن  بن أبی حسین عن جبیر بن مطعم کی سند سے مرفوع روایت کیا ہے:

وفی کلّ ایّام التّشر یق ذبع

ایام تشریق ( ۱۳،۱۲،۱۱ ذوالحجہ) کا ہر دن قر بانی کا دن ہے۔

“( مسند البزار (کشف الاستار: ۱۱۲۶)، الکامل لابن عدی: ۲۶۹/۳، نسخہ اخری: ۱۱۱۸/۳، واللفظ لہ ، السنن الکبری للبیھقی: ۲۹۶-۲۹۵/۹، المحلی لابن حزم :۲۷۲/۷)۔

اس کو امام ابنِ حبان( ۳۸۵۴) نے ” صحیح ” کہا ہے۔

تبصرہ:    یہ سند انقطاع کی وجہ سے ” ضعیف” ہے۔

حافظ ابنِ حجر ؒ لکھتے ہیں :

                   وفی اسنادہ انقطاع، فانّہ من روایۃ عبد اللہ ( والصّواب عبد الرّحمٰن ) ابن أبی ھسین عن جبیربن مطعم، ولم یلقہ۔

“اس کی سند میں انقطاع ہے یہ عبد الرحمٰن بن ابی حسین کی روایت ہے، وہ جبیر بن مطعم ؓ سے نہیں ملے ۔ ” ( التلخیص الحبیر : ۲۵۵/۲)

عبد الرحمٰن بن ابی حسین النوفلی ” مجہول الحال” ہے، امام ابنِ حبانؒ کے علاوہ کسی نے اس کی تو ثیق بیان نہیں کی۔

۲۔        اس روایت کو ابو المغیر ہ عبد القدوس بن الحجاج الحمسی( اور ابو الیمان الحکمبن نافع الحمصی مسند احمد/۴/۸۲، بیہقی : ۲۹۵/۹) نے سعید عن سلیمان بن موسیٰ عن جبر بن مطعم کی سندسے روایت کیا ہے۔

(مسند الامام احمد: ۸۲/۴، السنن الکبری للبیھقی: ۲۳۹/۵، ۲۹۵/۹)

تبصرہ:  اس کی سند  بھی انقطاع کی وجہ سے ” ضعیف” ہے، امام بیہقی ؒ فرما تے ہیں

ھذا ھو الصّحیح ، وھو مر سل۔ “

یہی صحیح  ہے ، لیکن یہ مرسل ہے۔  “

حافظ ابنِ کثیر ؒ فرما تے ہیں :

ھکذا رواہ أحمد ، وھو منقطع، فان سلیمان بن موسی الأشدق لم  ید رک جبیر بن مطعم۔

 ” امام احمد نے اس حدیث کو اسی طرح بیان کیا ہے، اور یہ منقطع ہے، کیو نکہ سلیمان بن موسیٰ الاشدق نے سید نا جبیر بن مطعم کا زمانہ نہیں پایا۔” (نصب الرایۃ للزیلعی: ۶۱/۳)

۳۔      حافظ ابنِ حجر ؒ فرما تے ہیں :

أخر جہ أحمد لکن فی سندہ انقطاع، ووسلہ الدّ ر قطنی ورجالہ ثقات۔ “

اس کو امام احمد نے روایت کیا ہے، لیکن  اس کی سند میں انقطاع ہے، اس کو دار قطنی ( ۲۸۴/۴، ح: ۴۷۱۱۔ ۴۷۱۲) نے موصول ذکر کیا ہے، اس کے راوی ثقہ ہیں ۔” (فتح الباری : ۸/۱۰)

تبصرہ: حافظ ابنِ حجر ؒ کا یہ دعویٰ کہ امام دار قطنی ؒ اس کو موصول کیا ہے، محل نظر ہے، سو ید بن عبدالعزیز  کاسعید بن عبد العزیز التنوخی سے سماع مطلوب ہے۔

نیز حافظ ابنِ حجر ؒ کایہ کہنا کہ اس کے راوی ثقہ ہیں ، بالکل صحیح  نہیں ، کیونکہ خود حافظ ابنِ حجر نے اس راوی سوید بن عبد العزیز کو” ضعیف ” قرار دیا ہے۔ ” (تقریب التھذیب : ۲۶۹۲، لسان المیزان: ۳/۴، فتح الباری : ۵۷۲/۱)

حافظ ہیثمی ؒ فرماتے ہیں :

ضعّفہ أحمد وجمھور الأ ئمّہ دحیم

” اس کو امام احمد اور جمہور ائمہ  نے ضعیف اور امام دحیم نے ثقہ کہا ہے۔ “( مجمع الزوائد : ۱۴۸/۳، ۸۹/۷)

امام بیہقی ؒ فر ماتے ہیں :

وھذا غیر قویّ لان ّ راویہ سوید۔ “

یہ سند قوی نہیں ہے، کیونکہ اس کا راوی سوید(بن عبد العزیز) ) ہے”

 (السنن الکبری  للبیھقی: ۲۳۹/۵)

۔      عمر وبن أبی سلمہ التّنّیسی عن حفص بن غیلان عن سلیمان بن موسیٰ انّ عمرو بن دینا ر حدّ ثہ عن جبیر بن مطعم رفعہ: کلّ أیّام التّشر یق ذبع۔

     یہ سند ” ضعیف” ہے، اس کا راوی احمد بن عیسیٰ الخشاب مجروح ہے، امام دار قطنی ؒ فرماتے ہیں :

لیس بالقویّ۔

” یہ قوی نہیں ہے۔” (سوالا ت السلمی : ۶۲)

ابنِ طاہر کہتے ہیں :

کذّاب یضع الحدیث ۔

” پرلے درجے کا جھوٹا راوی ہے  اور حدیثیں گھڑ تا ہے۔ ” (لسان المیزان: ۳۴۰/۱)

امام ابنِ حبان فرماتے ہیں : ” یہ مشہور راویوں کی طرف منکر روایتیں منسوب کرکے بیان کرتا ہے اور ثقہ راویوں کی طرف مقلوب منسوب کرکے بیان کرتا ہے، یہ منفرد ہو تو ناقبل حجت ہے۔” (المجروحین : ۱۴۶/۱)

امام ابنِ یونس کہتے ہیں :

وکان مضطرب الحدیث جدّا۔

“اس کی حدیث سخت مضطرب ہوتی ہے۔ ” (لسان المیزان لابن حجر : ۲۴۰/۱) اس پر توثیق کا  ایک حرف بھی ثابت نہیں ہے۔

۵۔       سید نا ابو سعید خدری ؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرما یا :

أیّام التّشریق کلّھا ذبح۔ “

ایام تشریق سارے کے سارے قربانی کے دن ہیں ۔ ” ( الکامل لابن عدی : ۴۰۰/۶)

تبصرہ: یہ سند سخت ترین” ضعیف” ہے، اس کا راوی معاویہ بن یحییٰ الصدفی جمہور کے نزدیک ” ضعیف” ہے، حفط ہیثمی ؒ لکھتے ہیں :

 و ضعّفہ الجمھور۔

   ” جمہور نے اس کو ضعیف کہا ہے۔ ” ( مجمع الزوائد للھیثمی : ۸۵/۳)

حافظ ابنِ حجر ؒ فرماتے ہیں کہ یہ ” ضعیف” ہے۔( تقریب التھذیب: ۶۷۷۲)

اس میں امام زہری ؒ کی ” تدلیس” ہے، پھر امام  زہری نے اس ے” مرسل ” بھی بیا ن کیا ہے۔

الحاصل:

   حدیث کلّ أیّام التّشریق کلّھا ذبح (ایام تشریق سارے کے سارے قربانی کے دن ہیں ) جمیع سندوں کے ساتھ” ضعیف” ہے، راجح قول یہ ہے کہ قربانی کے تین دن ہیں۔

نئے مضامین بذریعہ ای میل حاصل کیجیے

تمام مضامین

About Tohed.com

Tohed.com is an Urdu Islamic Website, aiming to preach true Islamic Information based on Qur'an and Sunnah. Here you can find out hundreds of urdu articles by reputed scholars. It's a completely non-commercial project with an objective to propagate Information about Islam in native language for the sub-continent readers.